پاکستان کو ایشیا اور عالمی کبڈی کپ کی میزبانی مل گئی!

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک‘ویب ڈیسک‘صحافی ڈاٹ کام) پاکستان میں عالمی کھیلوں کے انعقاد کا سلسلہ جاری ہے، پاکستان کو ایشیا کبڈی کپ 2022اور عالمی کبڈی کپ2024 کی میزبانی مل گئی ہے۔پاکستان کبڈی فیڈریشن کے سیکرٹری جنرل محمد سرور رانا نے کہا ہے کہ رواں سال ننکانہ صاحب میں انٹرنیشنل کبڈی ٹورنامنٹ اور کرتاپور راہ داری میں پاکستان اور بھارت کی ٹیموں کے درمیان 3میچزکھیلے جائیں گے،

آئی این پی کے مطابق بھارتی کبڈی ٹیم کیساتھ معروف کرکٹر سدھو بھی آئیں گے،دونوں ممالک کی کبڈی فیڈریشنز میں معاملات طے پاگئیہیں،دنیا بھر کے سکھ کرتارپور میں دونوں ٹیموں کے مابین میچز کے منتظر ہیں، پاکستان کبڈی فیڈریشن کو شدید مالی مشکلات کا سامنا ہے،حکومت اور ملٹی نیشنل اداروں سے درخواست ہے کہ روایتی کھیل کی سرپرستی کریں۔پاکستان سپورٹس بورڈ میں کبڈی ورلڈ کپ فاتح ٹیم کے اعزاز میں تقریب کا انعقاد کیا گیا۔

اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان کبڈی فیڈریشن کے سیکرٹری جنرل محمد سرور رانا نے کہا ہے کہ صدر مملکت کے مشکور ہیں جنہوں نے ورلڈ کپ کی فاتح ٹیم کی حوصلہ افزائی کیلئے دعوت دی،کورونا وباء کے باعث یہ تقریب دیر سے منعقد ہوئی،امید ہے کہ وزیراعظم پاکستان اور وزیر اعلی پنجاب بھی دنیا فتح کرنے والے ان کھلاڑیوں کو دعوت دینگے،

کبڈی کے ایونٹس قومی اور بین الاقوامی سطح پر تاحال بند ہیں۔انہوں نے کہا کہ ایشیا کبڈی کپ اکتوبر 2022 میں اور عالمی کبڈی کپ فروری 2024 میں پاکستان میں منعقد ہوگا۔ 2023 میں پاکستان میں کھیلی جانے والی سیف گیمز میں کبڈی کا ایونٹ شامل ہے اور اس سلسلہ میں تیاریاں بھی شروع کردی گئی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ روواں سال سرکل اسٹائل، بیچ اسٹائل، ایشین اسٹائل کبڈی چیمپئن شپ کے علاوہ ننکانہ صاحب میں انٹرنیشنل کبڈی ٹورنامنٹ اور کرتاپور راہ داری میں پاکستان اور بھارت کی ٹیموں کے درمیان کھیلے جائیں گے،کرتاپور راہ داری میں دونوں ممالک کے مابین 3میچز کھیلے جائیں گے،روزانہ کی بنیاد پر دونوں ٹیمیں وہاں مدمقابل ہونگی،بھارتی ٹیم کے ساتھ معروف کرکٹر سدھو بھی آئیں گے،

روزانہ میچ کے بعد بھارتی ٹیم واپس اپنے ملک چلی جائے گی، اور پھر اگلے روز واپس آئے گی،دونوں ممالک کی کبڈی فیڈریشنز میں معاملات طے پاگے ہیں،دنیا بھر سے ہمیں پیغامات مل رہے ہیں، دنیا بھر کے سکھ کرتارپور میں دونوں ٹیموں کے مابین میچز کے منتظر ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کبڈی فیڈریشن کے صدر چوہدری شافیع حسین کی ذاتی کاوشوں اور دن رات کوششوں کے باعث پہلی بار عالمی کبڈی کپ کا انعقاد پاکستان میں ہوا۔جس میں پاکستان نے بھارت کو 41 کے مقابلے میں 43 سکور سے شکست دے کر چیمپئن ہونے کا اعزاز حاصل کیا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کبڈی فیڈریشن کو شدید مالی مشکلات کا سامنا ہے،حکومت اور ملٹی نیشنل اداروں سے درخواست ہے کہ روایتی کھیل کی سرپرستی کریں۔

Sahafe.com

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں