کشمیر کا مقدمہ صرف شیرنی اور شیر لڑ سکتے ہیں!مریم نواز کی وزیر اعظم پر کڑی تنقید

حویلی(مانیٹرنگ نیوز‘ ویب ڈیسک‘ صحافی ڈاٹ کام) پاکستان مسلم لیگ نون کی نائب صدر مریم نواز نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کے لوگوں کی قربانیاں کبھی رائیگاں نہیں جائیں گی، شہیدوں کے خون کا مقدمہ نواز شریف اور مریم نواز لڑیں گے، سلیکٹڈ کی طرح کشمیر کو مودی کے حوالے نہیں کریں گے، سرحد پر کھڑے سپاہیوں کو سلام پیش کرتی ہوں،آج کا کشمیر کا وکیل کمزور ہے جس کا نام عمران خان ہے، کشمیر کا مقدمہ صرف شیرنی اور شیر لڑ سکتے ہیں، بھارت سن لے کہ کشمیری آزادی لے کر رہیں گے اور نواز شریف کی قیادت میں مقبوضہ کشمیر جائیں گے،

وزیراعظم عمران خان نے اپنی نئی نویلی اے ٹی ایم کے ساتھ باغ میں جلسے کرنے کی کوشش کی لیکن کشمیریوں نے جانے سے انکار کر دیا، نواز شریف نے حق حکمرانی کی خاطر اپنی کرسی کی قربانی دی لیکن عمران خان نے کرسی کی خاطر عوام کی قربانی دی،پیر کو آزاد کشمیر کے حوالے حویلی میں انتخابی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے کشمیر کا سفیر بن کر شیر کی طرح برہان وانی کا مقدمہ لڑا، نواز شریف منہ لٹکا کر یہ نہیں کہے گا کہ کشمیر مودی لے گیا ہے تو میں کیا کروں اور دو منٹ کی خاموشی اختیار کرو، کشمیر کا مقدمہ کمزور نہیں ہے، آج کا کشمیر کا وکیل کمزور ہے جس کا نام عمران خان ہے،

کشمیر کا مقدمہ صرف شیرنی اور شیر لڑ سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بھارت سن لے کہ کشمیری لے کر رہیں گے آزادی اور نواز شریف کی قیادت میں مقبوضہ کشمیر جائیں گے، نواز شری کا کشمیر کے ساتھ خون کا رشتہ ہے، نائب صدر مسلم لیگ نون نے کہا کہ ایٹمی دھماکے کرنے والے نواز شریف کو غدا کہا گیا، اگر نواز شریف غدار ہے تو پھر ہم سب غدار ہیں، پاکستان میں جو جتنا بڑا محب وطن ہوتا ہے اس کو اتنا بڑا غداری کا لقب ملتا ہے اور غداری اور چوری کا لقب بانٹنے کیلئے بھی بہت ساری فیکٹریاں کھلی ہیں جبکہ جس کا سیاسی اور عوامی مقابلہ نہیں کیا جا سکتا ہے تو پھر غداری کی پٹاریاں کھل جاتی ہیں لیکن پاکستان میں جس جس کو غدار کا لقب دیا گیا وہ اتنا ہی بڑا محب وطن ہے۔ انہوں نے کہا کہ غداری کا لقب بانٹنے والو دیکھو آج اسی نواز شریف کی بیٹی اتنا سفر طے کر کے ایل او سی پر کھڑی ہے۔

مریم نواز نے کہا کہ سرحد پر کھڑے سپاہیوں کو سلام پیش کرتی ہوں، جو سیاست سے بالاتر ہو کر سرحدوں کے محافظ بنے ہوئے ہیں اور اپنے وطن کی حفاظت کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے اپنی نئی نویلی اے ٹی ایم کے ساتھ باغ میں جلسے کرنے کی کوشش کی لیکن کشمیریوں نے جانے سے انکار کر دیا۔ مریم نواز نے امیدوار تحریک سردار تنویر الیاس پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ انہوں نے سینیٹ ٹکٹ کیلئے نواز شریف سے کہا تھا کہ وہ پارٹی فنڈ کیلئے 50کروڑ دینے کو تیار ہیں لیکن نواز شریف نے جواب دیا کہ نواز شریف دیتا ہے لیتا نہیں ہے۔

مریم نواز نے کہا کہ تنویر الیاس پر الزام ہے کہ انہوں نے ایک افسر کو ایک رب کی رشوت دی ہے اور سننے میں آیا ہے کہ رشوت لینے والے کو عہدے سے ہٹادیا گیا ہے لیکن میں یہ پوچھتی ہوں کہ رشوت دینے والا کیسے عمران خان کے ساتھ سٹیج پر کھڑا ہوتا ہے، رشوت دینے والے کے خلاف اقدامات کیوں نہیں کئے گئے۔ مریم نواز نے کہا کہ نواز شریف نے حق حکمرانی کی خاطر اپنی کرسی کی قربانی دی لیکن عمران خان نے کرسی کی خاطر عوام کی قربانی دی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں