سابق گورنر محمد زبیر اپنے بھائی اسد عمر کو اچانک فارغ کرنے پر وزیر اعظم پر برس پڑے‘جان کر تحریک انصاف والے بھی غصے میں آجائینگے

اسلام آباد (مانیٹرنگ نیوز‘صحافی ڈاٹ کام‘ ویب ڈیسک)مسلم لیگ ن کے رہنما اور اسدعمر کے بھائی محمدزبیر نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کو بتانا چاہیے کہ ایسا کیا ہوا کہ انہوں نے اچانک اسدعمر کو فارغ کیا۔ نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے رہنما محمدزبیر نے کہا کہ اسدعمر سمجھتے تھے کہ آئی ایم ایف اچھی چیز نہیں ہے کیونکہ یہ ملکوں کو تباہ کردیتا ہے، اب کیفیوژن یہ ہے کہ عمران خان نے انہیں مجبور کیا یا انہوں نے عمران خان کو اس پر راضی کیا۔ان کا کہنا تھا کہ عمران خان کہتے تھے کہ پیپلزپارٹی کے دور میں ملک پر قرضہ چڑھا، تب حفیظ شیخ اورشوکت ترین ہی وزیرخزانہ تھے اور اب یہ دونوں تحریک انصاف کی ٹیم کا حصہ ہیں۔ڈاکٹر اشفاق حسن نے بتایا کہ اسدعمر ابتدا سے ہی آئی ایم ایف کے پاس جانے کے حامی تھے، جب اس پر وزیراعظم نے اجلاس بلایا تو انہوں نے اراکین سے رابطہ کرکے درخواست کی، حفیظ پاشا اور کئی ایسے لوگوں کو بھی بلایا گیا جو اس فورم کا حصہ نہیں تھے۔محمدمالک نے بتایا کہ حفیظ شیخ سوائے پاکستان میں وزرات کے دنوں کے کبھی نہیں رہے، وہ ساری زندگی باہر رہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں