بجٹ تقریر ختم ہونے کے بعد وزیر اعظم نے قومی اسمبلی میں ایسا کیاکہاکہ اپوزیشن والوں نے غصے میں آکر بجٹ کی کاپیاں پھاڑی دی‘جانیے!

اسلام آ باد (مانیٹرنگ نیوز‘صحافی ڈاٹ کام‘ ویب ڈیسک) قو می اسمبلی میں بجٹ تقریر ختم ہونے اور مالی بل پیش ہونے کے بعد وزیر اعظم عمران خان نے وکٹری کا نشان بنایا، بجٹ تقریر کے دوران وزراء کے ساتھ بات چیت میں مصروف رہے،بعض مواقعوں پر جذباتی انداز میں بھی وزرا کے ساتھ بات چیت کرتے رہے اور کبھی کبھی مسکراتے رہے۔آ ئی این پی کے مطابق منگل کو قومی اسمبلی کا بجٹ اجلاس سپیکر اسد قیصر کی زیر صدارت ہوا۔ وزیر مملکت برائے ریو نیو حماد اظہر کی بجٹ تقریر دوران وزیر اعظم عمران خان مسکراتے رہے اور وزراء کے ساتھ بات چیت میں مصروف رہے۔ بعض مواقع پر جذباتی انداز میں بھی وزرا کے ساتھ بات چیت کرتے رہے۔ وفاقی وزراء مراد سعید،فواد چوہدری،شہریار آفریدی،علی محمد خان،علی زیدی،فیصل واڈا،شیریں مزاری،اعظم سواتی نے وزیر اعظم کو اپنے حصار میں لئے رکھا اور بجٹ تقریر ختم ہونے تک ان کے گرد کھڑے رہے۔بجٹ تقریر ختم ہونے کے بعد وزیر اعظم عمران خان اپنی نشست پر کھڑے ہو گئے اور اپوزیشن کی جانب رخ کر کے دونوں ہاتھ بلند کر کے خوشی کا اظہار کیا۔ بجٹ تقریر ختم ہونے کے بعد حکومتی ارکان اپنی حصار میں وزیر اعظم کو ایوان سے باہر لیکر آئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں