آئی ایم ایف کے پاکستان کے ساتھ کیا معاملات طے پا گئے؟ جانیے

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک ‘ویب ڈیسک‘ صحافی ڈاٹ کام) بین الاقوامی مالیاتی فنڈ(آئی ایم ایف)کے پاکستان کے ساتھ معاملات طے پا گئے۔ نجی ٹی وی کے مطابق آئی ایم ایف کا بیل آؤٹ پیکیج تین سال کے لیے ہو گا ۔ آئی ایم ایف نے پاکستان کے مجوزہ اثاثہ جات ڈیکلیئریشن سکیم سے اختلاف نہیں کیا، پاکستان نے مجوزہ اسکیم کا مسودہ آئی ایم ایف اور ایف اے ٹی ایف سے پہلے ہی شیئر کرلیا تھا۔ آئی ایم ایف اور ایف اے ٹی ایف نے اس سکیم پر کوئی اعتراض نہیں اٹھایا، قرض 6 ارب ڈالر ہو یا 9 ارب ڈالر اس بات کا فیصلہ آئی ایم ایف کے وفد کے دورہ پاکستان کے موقع پر کیا جائے گا۔ آئی ایم ایف وفد کے دورے کی تاریخ اگلے ایک دو روز میں طے ہو جائے گی، جبکہ آئی ایم ایف کے ساتھ بیل آؤٹ پیکیج پر دستخط اپریل میں ہی کر لیے جائیں گے۔ اثاثہ جات ڈیکلیریشن سکیم کو آئی ایم ایف کے دورے سے پہلے قانونی شکل دی جائے گی،اس سکیم کی حتمی منظوری آج(منگل کو) کابینہ سے لی جائے گی۔کابینہ سے منظوری پر ایک 2 روز میں صدارتی آرڈیننس کے ذریعے نافذ کر دی جائے گی، آرڈیننس جاری ہوتے ہی اثاثہ جات ڈیکلیریشن سکیم فوری طور پر نافذ ہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں