بغیر اجازت دوسری شادی کرنیوالے شخص کی سزا کالعدم

لاہور(مانیٹرنگ نیوز‘ ویب ڈیسک‘ صحافی ڈاٹ کام) لاہور ہائیکورٹ نے اجازت کے بغیر دوسری شادی کرنے والے شخص کی سزا کالعدم قرار دے دی۔ جسٹس امجد رفیق نے قانونی نکتہ طے کر دیا۔ عدالت نے قرار دیا کہ بغیر اجازت شادی کا کیس چلانے کا اختیار فیملی کورٹ کو ہے، مجسٹریٹ کو نہیں۔ مظفر نواز نامی شخص کو اجازت کے بغیر ستارہ جبین نامی خاتون سے دوسری شادی کے الزام میں سزا ہوئی تھی۔ مجسٹریٹ نے 3ماہ قید اور 5لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنائی تھی جبکہ مجسٹریٹ کے فیصلے کے خلاف سیشن عدالت نے بھی اپیل خارج کی۔ واضح رہے کہ مسلم فیملی لا آرڈیننس کے تحت کیس کی سماعت کا اختیار صرف فیملی کورٹ کو ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں