مال خرچ کرنے کے فضائل میں

حضرت ابوبکر ؓ کا غصہ میں صلہ رحمی کے ترک کا ارادہ کرنا (قسط۔3)
اس تہمت کے قصہ میں ان کی شرکت سے حضرت ابو بکر ؓ کو رنج ہوا اور ہونا بھی چاہیے تھا کہ انہوں نے اپنے ہو کر بے تحقیق اس بات کو پھیلایا‘اس رنج میں حضرت ابو بکر صدیق ؓنے قسم کھالی کہ مسطح ؓ کی اعانت نہ کریں گے‘اس پر یہ آیت شریفہ نازل ہوئی جو اوپر لکھی گئی‘روایات سے معلوم ہو تا ہے کہ حضرت صدیق اکبر ؓکے علاوہ بعض دوسرے صحابہ ؓنے بھی ایسے لوگوں کی اعانت سے ہاتھ کھینچ لیا تھا جنہوں نے اس تہمت کے واقعہ میں زیادہ حصہ لیا تھا‘ حضرت عائشہ ؓفرماتی ہیں کہ مسطح ؓ نے اس میں بہت زیادہ حصہ لیا اور حضرت ابوبکر ؓ کے رشتہ دار تھے‘ انہیں کی پرورش میں رہتے تھے‘جب براء ت نازل ہوئی تو حضرت ابوبکر ؓ نے قسم کھا لی کہ ان پر خرچ نہ کریں گے‘ اس پر یہ آیت ولا یا تل نازل ہوئی اور آیت شریفہ کے نازل ہونے کے بعد حضرت ابوبکر ؓ نے ان کو اپنی پرورش میں پھر لے لیا۔ (کتاب۔۔فضائل صدقات)

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں