مال خرچ کرنے کے فضائل میں

زانی چور وغیرہ پر صدقہ (قسط۔3)
علامہ عینی ؒ فرماتے ہیں کہ اس سے یہ بات بھی معلوم ہوئی کہ اللہ جل شانہ آدمی کی نیک نیتی کا بدلہ ضرور عطا فرماتے ہیں‘اس لئے کہ ان صدقہ کرنے والوں نے خالص اللہ کے واسطے صدقہ کرنے کا ارادہ کیا تھا (اسی لئے رات کو چھپا کر دیا تھا) تو حق تعالیٰ شانہ نے اس کو قبول فرمایا اور بے محل خڑچ ہو جانے کی وجہ سے مردود نہیں ہوا۔ (کتاب۔۔فضائل صدقات)

Sahafe.com

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں