مال خرچ کرنے کے فضائل میں

فرشتوں کی دعا خرچ کرنیوالے کو بدلہ دے‘روکنے والے کا مال برباد کر (قسط۔1)
حضور اقدس ﷺ کا ارشاد ہے کہ روزانہ صبح کے وقت دو فرشتے (آسمان سے) اترتے ہیں‘ ایک دعا کر تا ہے‘ اے اللہ خرچ کرنے والے کو بدل عطا فرما‘دوسرا دعا کر تا ہے اے اللہ روک کر رکھنے والے کا مال برباد کر۔
(ف): قرآن پاک کی آیات میں بھی نمبر20پر جو آیت گذری ہے اس سے اس کی تائید ہو تی ہے جس کا مضمون یہ ہے کہ جو کچھ تم خرچ کرو گے اللہ تعالیٰ اس کا بدل عطا کرے گا‘اس جگہ اور بھی متعدد روایات اس کی تائید میں گذر چکی ہیں‘ حضرت ابودرداء ؓ حضور اقدس ﷺکا ارشاد نقل کرتے ہیں کہ جب بھی آفتاب طلوع ہو تا ہے تو اس کی دونوں طرف دو فرشتے اعلان کر تے ہیں جس کو جن و انس کے سوا سب سنتے ہیں کہ اے لوگو! اپنے رب کی طرف چلو‘تھوڑی چیز جو کفایت کا درجہ رکھتی ہو اس زیادہ مقدار سے بہت بہتر ہے جو اللہ سے غافل کر دے۔
اور جب آفتاب غروب ہو تا ہے تو اس کے دونوں جانب دو فرشتے زور سے دعا کر تے ہیں‘ اے اللہ خرچ کرنے والے کو بدل عطا فرما اور روک کر رکھنے والے کے مال کو برباد کر (عینی بروایت احمد) ایک حدیث میں ہے کہ جب آفتاب طلوع ہو تا ہے تو اس کے دونوں جانب دو فرشتے آواز دیتے ہیں کہ یا اللہ خرچ کرنے والے کا بدل جلدی عطا فرما اور یا اللہ روک کر رکھنے والے کے مال کو جلدی ہلاک فرما‘ ایک اور حدیث میں ہے کہ آسمان میں دو فرشتے ہیں جن کے متعلق صرف یہی کام ہے کہ دوسرا کام نہیں‘ ایک کہتا رہتا ہے‘ یا اللہ خرچ کرنے والے کو بدل عطا کر‘ دوسرا کہتا ہے یا اللہ روک کر رکھنے والے کو ہلاکت عطا فرما (کنز)۔ (کتاب۔۔فضائل صدقات)

Sahafe.com

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں