حضرت آدم ؑ کا حضور ؐ کے وسیلہ سے توبہ کرنا

حضور اقدس ﷺ کا ارشاد ہے کہ حضرت آدم ؑ سے جب وہ گناہ صادر ہو گیا ( جس کی وجہ سے جنت سے دنیا میں بھیج دئیے گئے تو ہر وقت روتے تھے اور دعا و استغفار کر تے رہتے تھے ایک مرتبہ ) آسمان کی طرف منہ کیا اور عرض کیا یا اﷲ ! محمد ﷺ کے وسیلہ سے تجھ سے مغفرت چاہتا ہوں وحی نازل ہوئی کہ محمد ؐ کون ہیں ( جن کے واسطے سے تم نے استغفارکی )عرض کیا کہ جب آپ نے مجھے پیدا کیا تھا تو میں نے عرش پر لکھا ہوا دیکھا تھا لاَ اِ لہٰ اِ لّاَ اﷲُ مُحمَّدُ رَّ سُولُ اﷲتو میں سمجھ گیا تھا کہ محمد ﷺ سے اونچی ہستی کوئی نہیں ہے جن کا نام تم نے اپنے نام کے ساتھ رکھا ‘وحی نازل ہوئی کہ وہ خاتم النبیین ہیں تمہاری اولاد میں سے ہیں لیکن وہ نہ ہو تے تو تم بھی پیدا نہ کئے جا تے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں