ارشاد نبوی ﷺ——-

نبی اکرم ﷺ کا ارشاد ہے کہ جو شخص دو نمازوں کو بلا کسی عذر کے ایک وقت میں پڑھے وہ کبیر ہ گناہوں کے دروازوں میں سے ایک دروازہ پر پہنچ گیا‘(فائدہ) حضرت علی کرم اللہ وجہہ فرماتے ہیں کہ حضور ؐ نے ارشاد فرمایا کہ تین چیز میں تاخیر نہ کر و‘ایک نماز جب اس کا وقت ہو جائے‘دوسری جنازہ جب تیار ہو جائے‘تیسری بے نکاحی عورت جب اس کے جوڑ کا خاوند مل جائے (یعنی فوراً نکاح کر دینا) بہت سے لوگ جو اپنے آپ کو دین دار بھی سمجھتے ہیں اور گویا نماز کے پابند بھی سمجھے جاتے ہیں‘وہ کئی کئی نمازیں معمولی بہانہ سے‘ سفر کا ہو‘دکان کا ہو‘ملازمت کا ہو‘گھر آ کر اکٹھی ہی پڑھ لیتے ہیں‘یہ گناہ کبیرہ ہے کہ بلا کسی عذر بیماری وغیرہ کے نماز کو اپنے وقت پر نہ پڑھا جاوے‘گویا بالکل نماز نہ پڑھنے کے برابر گناہ نہ ہو لیکن بے وقت پڑھنے کا بھی سخت گناہ ہے اس سے خلاصی نہ ہوئی۔(بحوالہ۔ کتاب فضائل اعمال)

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں