ٹرین حادثہ‘سیاسی جماعتوں نے وزیراعظم سے بڑا مطالبہ کر دیا!

اسلا م آباد(مانیٹرنگ ڈیسک‘ویب ڈیسک‘ صحافی ڈاٹ کام) مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی نے ٹرین حادثے پر وزیر ریلوے شیخ رشید سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کر دیا۔ چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے ٹرین حادثے پر شیخ رشید سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹرین حادثوں پر وزیر کے مستعفی ہونے کی مثالیں دینے والے عمران خان اپنے وزیر سے استعفیٰ کب مانگیں گے، مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے ٹرین حادثے میں 12 قیمتی انسانی جانوں کے نقصان اور 67 سے زائد کے زخمی ہونے پر رنج و غم اور افسوس کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ ٹرینوں کے پے درپے حادثات انتہائی تشویشناک ہیں۔ تفصیلا ت کے مطابق ایک ما ہ میں 2بڑے حا د ثوں کے بعد سیا سی جما عتو ں کے قائدین نے وزیر ریلو ے شیخ رشید احمد سے استعفی کا مطالبہ کر دیا۔ صدر پاکستان مسلم لیگ (ن) شہباز شریف نے ٹرین حادثے میں 12 قیمتی انسانی جانوں کے نقصان اور 67 سے زائد کے زخمی ہونے پر رنج و غم اور افسوس کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ ٹرینوں کے پے درپے حادثات انتہائی تشویشناک ہیں، کمزور ریلوے ٹریک اور ناقص منصوبہ بندی حادثات کا باعث بن رہے ہیں، حادثے کے ذمہ داران کا تعین کرکے ان کے خلاف کارروائی کی جائے۔چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے ٹرین حادثے پر شیخ رشید سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹرین حادثوں پر وزیر کے مستعفی ہونے کی مثالیں دینے والے عمران خان اپنے وزیر سے استعفیٰ مانگیں گے،۔ انہو ں نے کہا کہ جب تک اس حادثے کی انکو ائری مکمل نہیں ہو تی تب تک شیخ رشید کو مستعفی ہو جا نے چاہیے ڈکٹیٹر مشرف کے دور میں بھی شیخ رشید نے ریلوے کا محکمہ تباہ کیا جس کا خمیازہ جمہوری حکومتوں کو بھگتنا پڑا جب کہ عمران خان نے بڑے فخر سے شیخ رشید کو ریلوے کی وزارت دی اور آج خان صاحب کا یہ فیصلہ بھی غلط نکلا ہے شیخ رشید کا وزرات سے روما نس نہ جا نے کتنی اور جا نیں نگلے گا۔مشیر اطلاعات سندھ مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ شیخ رشید کی انتظامی نااہلی ریلوے حادثات کی نظر میں سامنے آرہی ہے، شیخ رشید سیاست چمکانے کے بجائے ریلوے کے نظام پر توجہ دیں، رحیم یار خان میں ٹرین حادثہ ریلوے انتظامیہ کی غفلت کا نتیجہ ہے۔ وزیر اعظم شاہد خاقا ن عباسی نے رحیم یا ر خان میں ٹرین حادثے میں جا ں بحق ہو نے والے قیمتی انسانی جا نو ں کے ضیا ع پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہا ر کرتے ہو ئے کہا کہ پے درپے ٹرین کے حادثات میں انتہا ئی قیمتی جا نیں ضایع ہو ئی ہیں ہم حکو مت سے مطا لبہ کر تے ہے کہ وہ فی الفور وزیر ریلو ے سے استعفی لیں۔ انہو ں نے مزید کہا کہ حادثے کے اسباب و محرکات سامنے لاکر ذمہ داروں کا تعین کیاجائے۔مسلم لیگ (ن) کے سیکریٹری جنرل احسن اقبال نے حادثے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم استعفیٰ تو نہیں لے سکتے، ریلوے کسی اْس شخص کودیں جس کے پاس وزارت کے لیے وقت ہو، وزیراعظم کو چاہیے وہ جعلی کارکردگی کی حوصلہ شکنی کریں۔مسلم لیگ (ن) کے رہنما طلال چوہدری نے بھی ٹرین حادثے پر وزیر ریلوے شیخ رشید کے استعفے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ خوشامدی نیازی ایکسپریس چلانے سے پہلے عوام کی جان کی حفاظت کو یقینی بنانے کا انتظام کیا جائے، عمران نیازی شیدے ٹلی کو وزارت گالم گلوچ دے دیں، ریلوے کسی اور وزیر کودیں۔ دوسری جانب سینیٹر مولا بخش چانڈیو نے رحیم یار خان ٹرین حادثے میں قیمتی جانوں کی ضیاع پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم نے وزراء کو کام کے بجائے اپوزیشن کیخلاف بیان بازی پر لگا رکھا ہے جو سب سے زیادہ گالیاں دیں وزیرا عظم اس کی تعریف کرتے ہیں۔جمعرات کے دن پیپلزپارٹی کے سینٹر مولابخش چانڈیو اکبر ایکسپریس ٹرین حادثے میں جاں بحق ہونے والے افراد کے اہلخانہ سے تعزیت اور زخمیوں کی جلد صحتیابی کی دعا کرتے ہوئے کہا کہ ٹرین حادثات تشویشناک صورتحال اختیار کرتے جارہے ہیں لائے گئے وزیر اعظم ٹرین حادثوں کے ذمہ دار ہیں انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم سمیت کابینہ میں کسی کو اپنے کام میں دلچسپی نہیں حکومت کو ملک چلانے کی فکر نہیں انہوں نے تمام توانائیاں انتقام پر لگا رکھی ہے وزیر اعظم تمام وزراء کو کام کے بجائے اپوزیشن کے خلاف بیان بازی پر لگا رکھا ہے جو وزیر زیادہ گالیاں دیں وزیر اعظم اس کی تعریف کرتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں