وفاقی حکومت نے کراچی کے 3بڑے ہسپتا لوں کا انتظامی اور مالی کنٹرول کیوں سنبھال لیا؟ جان کر سب حیران رہ جائینگے

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک‘ویب ڈیسک‘ صحافی ڈاٹ کام)وفاقی حکومت نے کراچی کے تینوں بڑے ہسپتالوں بشمول جناح پوسٹ گریجویٹ میڈیکل سینٹر، قومی ادارہ برائے امراض قلب (این آئی سی وی ڈی ڈی)اور قومی ادارہ برائے امراض اطفال (این آئی سی ایچ)کا کنٹرول سنبھال لیا۔وفاقی وزارت صحت کی جانب سے جاری کردہ نوٹیفیکیشن کے مطابق عدالتی اور وفاقی کابینہ کے فیصلوں کے بعد وفاقی حکومت نے سندھ کے 3 بڑے ہسپتا لوں کا انتظامی اور مالی کنٹرول سنبھال لیا۔وفاقی وزارت صحت کے اعلی حکام نے بتایا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں وفاقی حکومت کو 90 روز کے اندر کراچی کے تینوں ہسپتالوں کا انتظام سنبھالنا تھا، یہ 90 روز اسی ہفتے پورے ہوگئے تھے جس کے بعد محکمہ قانون کی جانب سے کہا گیا کہ وفاق کو تینوں ہسپتا لوں کا کنٹرول سنبھالنے کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردینا چاہیے۔نوٹیفیکیشن کے مطابق جناح ہسپتا ل قومی ادارہ برائے امراض قلب اور قومی ادارہ برائے امراض اطفال کے ملازمین اور اثاثوں کا انتظام وفاقی وزارت صحت نے سنبھال لیا۔وفاقی کابینہ نے 2 اپریل کو سپریم کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں تینوں ہسپتا لوں کو وفاق کے ماتحت کرنے کی منظوری دی تھی۔وفاقی وزارت صحت کے حکام نے کہا کہ اس وقت وفاقی وزارت خزانہ آنے والے بجٹ میں تینوں ہسپتا لوں کے لیے 12 ارب روپے سے زائد رقم مختص کرنے کے حوالے سے پریشان ہے۔دوسری جانب سندھ کے محکمہ صحت کے حکام اور تینوں ہسپتا لوں کے ایگزیکٹیو ڈائریکٹران نے اس حوالے سے لاعلمی کا اظہار کیا ہے۔جناح ہسپتال کی ایگزیکٹو ڈائریکٹر ڈاکٹر سیمی جمالی نے کہا کہ انہیں اس حوالے سے سے کوئی نوٹیفکیشن موصول نہیں ہوا لیکن انہوں نے کہا کہ ایک نوٹیفکیشن جناح ہسپتا ل اور دیگر دونوں ہسپتا لوں کو وفاق کے حوالے کرنے سے متعلق سوشل میڈیا پر وائرل ہے لیکن جب تک انہیں وفاقی حکومت کی جانب سے سرٹیفائیڈ نوٹیفیکیشن نہیں ملے گا وہ اس حوالے سے کچھ کہنے کی پوزیشن میں نہیں ہیں۔دوسری جانب وفاقی حکومت کا کہنا ہے کہ تینوں ہسپتا لوں کے انتظام چلانے کے لئے بورڈ آف گورننس تشکیل دیا جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں