نواز شریف نے مشروط حکومتی اجازت پر ملک سے باہر جانے سے انکا کردیا‘تحریک انصاف‘مسلم لیگ ن کے ایک دوسرے پر بیماری پر سیاست کرنے کے الزامات!

ٓاسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک‘ویب ڈیسک‘ صحافی ڈاٹ کام)سابق وزیر اعظم نواز شریف نے حکومت کی طرف سے ای سی ایل سے نام نکالنے کی مشروط شرط کی پیش نظر ملک سے باہر جانے سے انکار کردیا ہے‘ جیو نیوز کے اینکر منیب فاروق نے پروگرام آپس کی بات میں بتایا کہ با وثوق ذرائع کے حوالے سے نواز شریف نے جاتی امراء میں حکومتی مشروط اجاز ت کے بعد ملک سے باہر جانے سے انکار کردیا ہے جبکہ دوسری طرف مسلم لیگ ن کے لیگل کونسل عطا تارڑ نے میڈیا کو بتایا ہے کہ ہائیکوٹ اور سپریم کورٹ میں ضمانتی احکامات پر مچلکے جمع کرا چکے ہیں جس کے بعد حکومت کی طرف سے سیکورٹی بانڈز جمع کرانے کا کوئی جواز نہیں ہے واضح رہے کہ ذرائع کے مطابق نواز شریف اور شہباز کی لندن روانگی کنفرم نہیں ہوسکی‘نواز شریف نے حکومتی مشروط اجازت پر بھی ملک سے باہر جانے سے انکار کردیا ہے میڈیا رپورٹس کے مطابق نواز شریف کے بیرون ملک جانے پر حکومت اور شریف خاندان کے درمیان ڈیڈ لاک برقرار ہے‘تحریک انصاف موقف پیش کررہی ہے کہ حکومت انسانی ہمدردی کی بنیاد پر نواز شریف کو بیرون ملک بھیجنا چاہتی ہے لیکن بیماری پر سیاست کی جارہی ہے جبکہ مسلم لیگ ن کا موقف ہے کہ تحرک انصاف کی حکومت بلا جواز روڑھے اٹکا رہی ہے اور نواز شریف کی تشویشناک حالت کے باوجود ذلفی بخاری کی طرح انکا نام ای سی ایل سے نکال کر انہیں بیرون ملک روانہ نہیں کیا جارہا‘پیپلز پارٹی کی طرف سے بھی اس صورتحال کی شدید مذمت کی جارہی ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں