خواجہ برادران کی مشکلات میں اضافہ‘احتساب عدالت نے کونسا حکم دیدیا؟ جانیے

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک‘ویب ڈیسک‘ صحافی ڈاٹ کام)لاہور کی احتساب عدالت نے پیراگون ہاؤسنگ سوسائٹی سکینڈل کیس میں خواجہ برادران کے جوڈیشل ریمانڈ میں 14روز کی توسیع کر دی۔ جمعرات کو لاہور کی احتساب عدالت میں خواجہ برادران خواجہ سعد رفیق اور سلمان رفیق کے خلاف پیراگون ہاؤسنگ سوسائٹی سکینڈل کیس کی سماعت ہوئی۔احتساب عدالت کے جج جواد الحسن نے کیس کی سماعت کرتے ہوئے خواجہ برادران کے مزید 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ میں توسیع کردی اور انہیں 11 جولائی کو پیش کرنے کا حکم دیا۔عدالت میں خواجہ برادران کے کیس کے متعلق ریفرنس کی کاپیاں تقسیم کی گئیں، خواجہ سلمان رفیق کو کیمپ جیل سے 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پورا ہونے کے بعد پیش کیا گیا۔خواجہ سعد رفیق قومی اسمبلی کے بجٹ اجلاس میں ہونے کے باعث عدالت میں پیش نہیں ہو سکے، قومی اسمبلی کے اسپیکر اسد قیصر کی جانب سے ان کے پروڈکشن آرڈر جاری ہوئے تھے۔خواجہ سعد رفیق کے عدالت میں پیش نہ ہونے کی صورت میں ان کی درخواست جمع کروائی گئی۔نیب پراسیکیوٹر کے مطابق خواجہ برادران پر پیراگون سٹی کرپشن میں مبینہ طور پر مالی فوائد حاصل کرنے کا الزام ہے۔احتساب عدالت لاہورکے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ سلمان رفیق نے کہا کہ کل کی آل پارٹیز کانفرنس میں بہت سے فیصلے کیے گئے۔انہوں نے مزید کہا کہ سلیکٹڈ وزیر اعظم کے نام سے عمران نیازی کو بڑی چڑ ہے، سلیکٹڈ وزیر اعظم 5 سال اپنے عہدے پر برقرار نہیں رہیں گے۔خواجہ سلمان رفیق نے یہ بھی کہا کہ ڈالر کو پر لگ چکے ہیں، مہنگائی سے عوام کی چیخیں نکل رہی ہیں، چند دنوں تک آئی ایم ایف کا اجلاس ہو گا، جس میں مہنگائی کے سونامی کے بارے میں فیصلے کیے جائیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں