حکومت عوام کو بیوقوف بنا رہی ہے‘سعد رفیق کا دبنگ بیان!

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک‘ویب ڈیسک‘ صحافی ڈاٹ کام) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما اور رکن قومی اسمبلی خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ حکومت سب اچھے کی آواز لگا رہی ہے لیکن حقیقت میں ایسا نہیں ہے۔ ملک میں سیاسی درجہ حرارت بڑھ رہا ہے۔ ایسے حالات میں ملک نہیں چلے گا۔ اگر ملک میں سیاسی لڑائی شروع ہو گی تو کوئی بھی شخص ملک میں پیسہ نہیں لگائے گا جبکہ سرمایہ کار اپنا پیسہ پاکستان سے باہر منتقل کر دیں گے۔ احتساب عدالت میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کے تاجروں کے ساتھ مذاکرات کامیاب نہیں ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ جب حکمران اپنے سیاسی مخالفین کو جیلوں میں ڈالنے اور ان کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنے یا نہ کرنے کے چکروں میں رہیں گے تو ملک کو درپیش مسائل حل نہیں کئے جا سکتے۔ انہوں نے کہا کنٹرولڈ جمہوریت پاکستان میں نہیں چل سکتی۔ اس سے قبل ملک میں کنٹرولڈ ڈیموکریسی کے دس مرتبہ تجربات کئے گئے جو ناکام ہوئے۔ خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ خاطر اپوزیشن نے حکومت سے مفاہمت کی کوشش کی جسے ہماری کمزروری سمجھا گیا اور اسے این آر او کا نام دیا گیا۔ حکومتی پالسیاں قوم کو تقسیم در تقسیم کر رہی ہیں۔ جس سے خطرہ ہے کہ لوگ اپنا پیسہ باہر لے جائیں گے۔ خواجہ سعد رفیق نے حکمرانوں سے اپیل کی کہ خدا کے لئے ملک کے معاملات کو سمجھیں اور پاکستان کے عوام کے حالات پر رحم کریں اور ملک کے حالات کو بہتر بنانے کی کوشش کریں۔ قبل ازیں احتساب عدالت نے پیراگون سٹی سکینڈل کیس کی سماعت کرتے ہوئے آئندہ سماعت 16 جولائی تک ملتوی کر دی جبکہ اس موقعہ پر پاکستان مسلم لیگ (ن) کے کارکنوں کو خواجہ سعد رفیق سے اظہار یکجہتی کے لئے آنے سے روکنے کے لئے نہ صرف اضافی نفری تعینات کر رکھی تھی بلکہ احتساب عدالت کی جانب جانے والے راستوں کو حسب معمول کنٹینرلگا کر بند کر رکھا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں