اگلے 2 سال ہماری حکومت کیلئے بہت مشکل ہیں،، وزیراعظم کا تقریب سے خطاب

اسلام آباد(مانیٹرنگ نیوز‘ویب ڈیسک‘ صحافی ڈاٹ کام) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ملک میں ہر الیکشن متنازعہ ہو جاتا ہے، کسی نے نہیں بتایا کہ ان متنازعہ انتخابات کو کیسے ٹھیک کرنا ہے، جو ہارتا ہے وہ کہتا ہے دھاندلی ہوئی، ای وی ایم پاکستان کے سارے مسائل حل کر دے گی، کرپٹ نظام سے فائدہ اٹھانے والے ای وی ایم کو مسترد کر رہے ہیں، کرپٹ نظام سے فائدہ اٹھانے والے چند افراد شفاف انتخابات کیلئے رکاوٹ ہیں، اگلے 2 سال ہماری حکومت کیلئے بہت مشکل ہیں، الیکشن ترقیاتی فنڈز نہیں، حکومتی کارکردگی سے جیتیں گے، ہماری حکومت کیلئے بہت ضروری ہے کہ آخری 2 سال ٹارگٹ سیٹ کریں، کرکٹ ٹیم میں 2 طرح کے کھلاڑی دیکھے، ایک باصلاحیت کھلاڑی ہوتے تھے، دوسری قسم ایسے کھلاڑیوں کی تھی جو انتھک محنت کرتے تھے، مسلسل جدوجہد کرنیوالا ہی زندگی میں کامیاب ہوتا ہے، زندگی میں جیت ہو یا ہار، اپنی کارکردگی کا جائزہ لیتے رہنا چاہیئے، یقین ہے وزرا اپنے اہداف حاصل کرلیں گے۔ اسلام آباد میں پرفارمنس ایگریمنٹ پر دستخط کی تقریب سے وزیراعظم عمران خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے 3 سالہ دورحکومت میں بہت مشکل فیصلے کیے، ہم بہت مشکل وقت سے نکل کر آئے ہیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ ہمیں الیکٹرانک ووٹنگ مشین سیکوئی فائدہ نہیں ہوگا،مافیازملک میں اصلاحات نہیں چاہتے،سینیٹ کے 1500 ووٹ والے الیکشن بھی متنازع رہے،ملک میں جوبھی ہارتا ہے وہ کہتا ہے دھاندلی ہوئی ہے۔ کسی نے نہیں بتایا کہ متنازع انتخابات کوٹھیک کیسے کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کابینہ میں بہت سے وزرا مشکل وقت میں گھبرائے، کرپٹ سسٹم سے فائدہ اٹھانے والے ای وی ایم کی مخالفت کررہے ہیں، ای وی ایم سے بٹن دبانے سے فوری نتائج آجائیں گے۔ ای وی ایم پاکستان کیسارے مسائل حل کردیگی۔ وزیراعظم نے کہا کہ ملک میں تمام انتخابات متنازع رہے، ہدف کے حصول میں مشکلات آنے پرہارمان جاتے ہیں، یقین ہے وزرا اپنے اہداف حاصل کرینگے۔ وزیراعظم عمران خان نے تقریب سے خطاب کے دوران کہاکہ زندگی میں جب تک آپ ہارنہیں مانتے آپ کوکوئی نہیں ہراسکتا، ٹارگٹ سیٹ کرنے کے بجائے اس پرکوئی سمجھوتا نہ کریں، مسلسل جدوجہد کرنے والا ہی زندگی میں کامیاب ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اللہ تعالی نے ملک کوبہت سی صلاحیتوں سینوازاہے،حکومت میں رہتے ہوئے ضروری ہے کہ کارکردگی کاجائزہ لیں، اگلے 2 سال کیلئے ٹارگٹ سیٹ کرنیہیں، رواں سال ہدف حاصل کرلیں توآئندہ سال آسانی ہوگی۔ ہماری حکومت کیاگلے 2 سال مشکل ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں