آرمی چیف کی ایران کے چیف آف جنرل سٹاف سے اہم ملاقات میں گفتگو

راولپنڈی (مانیٹرنگ نیوز‘ ویب ڈیسک‘ صحافی ڈاٹ کام) چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاویدباجوہ نے کہاہے کہ پاکستان اور ایران دو برادر ملک ہیں، علاقائی امن اور استحکام کے لیے دونوں کا قریبی تعاون بہت ضروری ہے۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق بدھ کو اسلامی جمہوریہ ایران کی مسلح افواج کے چیف آف جنرل سٹاف (سی جی ایس)میجر جنرل محمد باقری نے ایک اعلی سطحی وفد کے ہمراہ جی ایچ کیو کا دورہ کیا۔ ایرانی چیف آف جنرل سٹاف کو یہاں آمد پر پاک فوج کے چاق وچوبند دستے نے گارڈ آف آنر پیش کیا جبکہ مہمان خصوصی نے جی ایچ کیو میں یادگار شہدا پر پھولوں کی چادر چڑھائی اور شہدائے پاکستان کے لیے دعا کی۔بعد ازاں ایرانی چیف آف آرمی سٹاف نے پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ سے ملاقات کی۔ ملاقات کے دوران افغانستان کی صورتحال، علاقائی سلامتی اور سرحدی انتظام خاص طور پر پاک ایران سرحد پر باڑ لگانے سمیت کئی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ دونوں نے دفاعی تعاون کو مزید بڑھانے اور علاقائی امن کے لیے مل کر کام کرنے اور دہشت گردی جو مشترکہ دشمن ہے، کا مل کر جواب دینے پر اتفاق کیا۔اس موقع پر آرمی چیف جنرل قمر جاوید نے کہا کہ پاکستان اور ایران دو برادر ملک ہیں اور علاقائی امن اور استحکام کے لیے ہمارا قریبی تعاون بہت ضروری ہے۔آئی ایس پی آر کے مطابق وفد کی سطح کی ملاقات کے دوران، ایرانی وفد کو ایک جامع علاقائی سلامتی اور آپریشنل صورتحال کے علاوہ پاک فوج کے تربیتی نظام بشمول دوست ممالک کے ساتھ تعاون اور مختلف مشترکہ فوجی مشقوں کے انعقاد کے بارے میں بریفنگ دی گئی۔آئی ایس پی آر کے مطابق ایران کی مسلح افواج کے چیف آف جنرل سٹاف نے فوج سے فوج کے تعلقات خاص طور پر انسداد دہشت گردی اور تربیتی حدود کو مزید مضبوط کرنے کی خواہش کا اظہار کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں