محکمہ خوراک میں کھلبلی مچ گئی!

سکھر(مانیٹرنگ نیوز‘ویب ڈیسک‘ صحافی ڈاٹ کام)کراچی میں گندم اسٹاک ختم ہونے کو دو ہفتے باقی، محکمہ خوراک میں کھلبلی، گندم بحران سے نمٹنے کیلئے سیکریٹری خوراک لئیق احمد سکھر پہنچ گئے، کمشنر آفس میں متعلقہ افسران کا اجلاس۔آئی این پی کے مطابق سیکریٹری خوراک لئیق احمد نیگندم کے بحران سے نمٹنے کیلئے کمشنر آفس سکھر میں متعلقہ افسران سے میٹنگ کی اور کہا کے کراچی میں 15 سے 20 دن کا گندم اسٹاک رہ گیا ہے، بلوچستان اور افغانستان گندم اسمگلنگ کو روکا جائے،سکھر اور لاڑکانہ ریجن میں 3 لاکھ 60 ہزار میٹرک ٹن گندم ذخائر موجود ہے، مل مالکان اور ٹرانسپورٹرز کی جانب سے گندم کراچی منتقلی پر رکاوٹیں ڈال رہے ہیں، صرف دس ہزار ٹن گندم کراچی منتقل ہو سکی ہے اجلاس میں انہوں نے متعلقہ افسران کو ہدایات دی کہ وہ گندم کی منتقلی میں رکاوٹیں ڈالنے والوں کے خلاف سخت کاروائی کریں، خیرپور کا ایک ٹرانسپورٹر ٹھیکیدار غائب ہوگیا ہے، جیسے بلیک لسٹ کیا جائے، ٹھیکیدار کی محکمہ خوراک کے پاس کروڑوں روپے کے واجبات ہے وہ روکی جائے، بلوچستان اور افغانستان میں آٹے کا بحران ہے، سندھ سے گندم اسمگلنگ پر کڑی نظر رکھی جائے، گندم اسمگلنگ کی روک تھام کے لئے رینجرز سے بھی مدد لی جائے۔ اجلاس میں کمشنر سکھر اور گھوٹکی، سکھر اور خیرپور کے ڈی سیز کی نے شرکت کی اجلاس میں کمشنر سکھر شفیق مھیسر نے سیکریٹری کو انتظامی مدد کی یقین دہانی کرائی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں