سوشل میڈیا پر جعلی تصاویر اور خبریں پھیلانے والوں کے لئے وزارت داخلہ نے شکنجہ تیار کر لیا اب کوئی بھی بچ نہ پائے گا

اسلام آباد: دفترخارجہ نے کہا ہے کہ وزارت داخلہ اور اطلاعات جعلی خبریں پھیلانے والے اکاؤنٹس کاجائزہ لیں ، امید ہے صحافی سوشل میڈیا پر کسی بھی چیز پر ری ٹوئٹ کرتے ہوئے محتاط رہیں گے۔تفصیلات کے مطابق دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر فیصل نے اپنے بیان میں کہا وزارت داخلہ اور اطلاعات جعلی خبریں پھیلانے والے اکانٹس کا جائزہ لیں، جعلی خبریں پھیلانے والوں کیخلاف قانونی کارروائی ہونی چاہئے، امید ہے صحافی سوشل میڈیا پر کسی بھی چیز پر ری ٹوئٹ کرتے ہوئے محتاط رہیں گے۔یاد گذشتہ روز سوشل میڈیا پر گردش کرتی آسیہ بی بی کی تصاویر کے حوالے سے ترجمان خارجہ کا کہنا تھا کہ آسیہ بی بی پاکستان میں ہی ہے ، کہیں نہیں گئیں، سوشل میڈیا پر ان کی بیرون ملک روانگی کی خبریں اور تصاویر غلط ہیں۔اس سے قبل مسیحی خاتون آسیہ بی بی کے معاملے پر ترجمان دفتر خارجہ نے میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے کہا تھا کہ آسیہ بی بی محفوظ جگہ پر پاکستان میں ہی موجود ہیں۔ وہ آزاد شہری ہیں جہاں جانا چاہیں جا سکتی ہیں۔ پاکستان میں آزاد شہری کی نقل و حرکت پر کوئی پابندی نہیں ہے۔وزیراطلاعات فوادچوہدری نے بھی آسیہ بی بی کے بیرون ملک جانے کی تردید کرتے ہوئے کہا تھا ہیڈ لائنز کیلئے جھوٹی خبریں چلانا عادت بنتی جارہی ہے، آسیہ بی بی کامعاملہ انتہائی حساس نوعیت کاہے، آسیہ بی بی کے ملک چھوڑنے کی جھوٹی خبریں چلانا غیر ذمہ دارانہ ہے، سنسنی پھیلانے والامخصوص میڈیاخبروں کیچنامیں ذمہ دارانہ رویہ اپنائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں