تبتی نوجوان نے سوشل میڈیا کے لاکھوں چینی صارفین کے دل جیت لئے

چھینگ ڈو(مانیٹرنگ نیوز‘ویب ڈیسک‘صحافی ڈاٹ کام)تامدرین جس کا مینڈارن زبان میں نام ڈنگ ژین ہے، سیچھوان صوبے میں تبت کے خوداختیار پریفیکچر گارز کی لتانگ کاونٹی کے ایک گاں کا 20سالہ تبتی چرواہا ہے۔ایک ماہ سے کم عرصہ پہلے تک وہ ایک معمولی چرواہا ہی تھا جب اس کی مسکراہٹ بھری 7 سیکنڈ کی ایک ویڈیو وائرل ہوگئی جس سے تامدرین چین میں سوشل میڈیا کی آج کی مقبول اور ہر دلعزیز شخصیت بن چکا ہے۔

شِنہوا کے مطابق جو چیز تامدرین کو انٹرنیٹ کی دیگر مشہور شخصیات سے ممتاز کرتی ہے وہ نہ صرف اس کا پرکشش اور جذبات سے بھرپور سراپا ہے، جیسا کہ اس کے چاہنے والوں کا کہنا ہے۔ جب وہ مزید ویڈیوز جاری کرتا ہے تو اس کی معصومیت اور خلوص شہروں میں رہنے والوں کی ایک بڑی تعداد کو اس کو گھر پر قریب سے دیکھنے کے لئے بے چین کردیتی ہے۔

پہلی ویڈیو وائرل ہونے کے فورا بعد ہی، ایک مقامی ٹور آپریٹر نے تامدرین کو لتانگ کے سیاحتی سفیر کی حیثیت سے اپنے ہاں ملازمت دے دی تھی۔ جنوب مغربی چین کے صوبہ سیچھوان کے صدر مقام چھینگ ڈو کا ہفتہ بھر کا دورہ، 20 سالہ نوجوان کا اپنے آبائی شہر سے باہر پہلا سفر تھا۔

تامدرین کی فوری شہرت کی بدولت لتانگ میں دلچسپی بہت بڑھ گئی ہے، خاص طور پر جب سے “ڈنگ ژین کی دنیا” کے عنوان سے ایک پروموشنل ویڈیو آن لائن جاری کی گئی تھی۔لاکھوں لوگ ویڈیو کے نظاروں سے لطف اندوز ہوئے جبکہ کئی ایک لتانگ کا سفر کرنے کے بارے میں سنجیدگی سے سوچ رہے ہیں۔آن لائن سفری خدمات فراہم کرنے والی ویب سائٹ قونار ڈاٹ کام کے مطابق 11 نومبر سے25 نومبر تک گارز پریفیکچر میں ہوٹلوں کی بکنگ میں گزشتہ سال کے مقابلے میں 89 فیصد اضافہ ہوا ہے اور بعد کے ہفتوں میں بھی اضافے کا سلسلہ جاری ہے

۔Sahafe.com.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں