طالبان کے ساتھ مذاکرات کے ۔۔۔!! زلمے خلیل زاد نے مزید کیا کہا ؟ جانیے

واشنگٹن۔افغان مفاہمتی عمل کے لئے امریکی نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد نے کہا ہے کہ طالبان کے ساتھ مذاکرات کے میراتھان راؤنڈ میں معاہدے کا مسودہ تیار کر لیا گیا ہے ۔ اس مسودے میں دہشت گردی کے خاتمہ کی یقین دہانی اور غیر ملکی افواج کے انخلاء پر اتفاق ہوا ہے لیکن جب تک ہر چیز پر اتفاق رائے نہیں ہو جاتا کوئی معاہدہ حتمی نہیں ہو گا۔ اپنے ٹویٹر پیغام میں زلمے خلیل زاد کا کہنا تھا کہ امن کے لئے چار چیزیں درکار ہیں ، انسداد دہشت گردی کی یقین دہانی، افواج کا انخلاء، افغانوں کے بین مذاکرات اور جامع جنگ بندی ۔ جنوری کے مذاکرات میں ان چار نکات پر اصولی طور پر ارتفاق کیا گیا تھا اور اب ہم نے پہلی دو چیزوں کے ڈرافٹ پر اتفاق کیا ہے۔ افواج کے انخلاء اور انسداد دہشت گردی کے نکات پر مکمل منظوری کے بعد طالبان دوسرے افغان دھڑوں او ر افغان حکومت کے مابین مذاکرات شروع ہوں گے جس میں سیاسی مفاہمت اور جامع جنگ بندی پر بات ہو گی۔ زلمے خلیل زاد کا کہنا تھا کہ ان کا اگلا قدم واشنگٹن میں دوسرے ساتھیوں سے مشاورت ہو گا اور وہ دوبارہ بھی ملیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں