طالبان اور امریکہ کے درمیان امن مذاکرات میں کیا پیشرفت ہوئی ؟ ضرور جانیے

دوحہ۔قطر میں جاری افغان طالبان اور امریکہ کے درمیان امن مذاکرات کا پانچواں دور ختم ہو گیا‘ جس میں فریقین کے درمیان دو نکات پر اتفاق ہوگیا۔ 16 روز جاری رہنے والی بات چیت میں انسداد دہشت گردی اور غیر ملکی فوج کے انخلاء کے معاہدوں کا ڈرافٹ تیار ہو گیاہے ۔ افغان میڈیا کے مطابق قطر کے دارلحکومت دوحہ میں ہونے والے افغان امن مذاکرات کے پانچویں دور میں کئی اہم نکات پر مشتمل معاہدے کا ڈرافٹ تیار ہو گیا ہے۔ ڈرافٹ انگریزی اور افغان زبان دری میں تیار کیا گیا ہے ۔ ذرائع کے مطابق ڈرافٹ کے کسی نقطہ پر ابھی فریقین کے دستخط نہیں ہوئے ہیں۔ افغان طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ مذاکرات میں غیر ملکی افواج کے انخلاء اور افغان سرزمین کسی کے بھی خلاف استعمال نہ ہونے کی یقین دہانی سے متعلق تفصیلی بات ہوئی اور دونوں امور پر پیش رفت ہوئی ہے۔ فریقین اب تک کی پیش رفت پر غور کریں گے اور اپنی، اپنی قیادت کو اس حوالہ سے آگاہ کر کے آئندہ ملاقات کی تیاری کریں گے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں